New Fatima Blog

This website is about khwab ki tabeer by ibn e siren, Ibn e kathir, khwab nama e yousafi in urdu , Quran, Hadith, Dramas in Urdu and english, Poetry, Naat, and cooking.

a ads

Tuesday, September 29, 2020

Jab in Kay Jhot Kay Bakhiye Udhairta Hon To Dost (Ali Zaryoun)


ali zaryoun poetry



جب ان کے جھوٹ کے بخیے ادھیڑتا ہوں تو دوست
بگڑ کے کہتے ہیں اس شخص کو حیا کوئی نئیں 
اسی لیے تو یہ کھل کر خدا پہ بولتے ہیں 
پتا جو ہے کہ انہیں بھی پتا وتا کوئی نئیں 
قدم تو دور ! نظر تک بہک نہ پائے یہاں
خمارِ عشق میں گنجائشِ خطا کوئی نئیں
غضب تو یہ ہے کہ وحشت پہ شعر کہتے ہیں 
سرے سے جن کا محبت سے واسطہ کوئی نئیں 
وسیلے ڈھونڈ رہے ہیں کہ اب معافی ملے
جنہیں لگا تھا کہ زریون کا خدا کوئی نئیں 

Jab in Kay Jhot Kay Bakhiye Udhairta Hon To Dost 
Bigad Kay Kehte Hain Es Shakhs ko Haya Koi Nai
Issi Liye To Ye Khul Kar Khuda Pe Bolte Hain 
Pata Jo Hay k Inhain Bhi Pata Wata Koi Nai 
Qadam To Door ! Nazar Tak Behak Na Paaye Yahan 
Khumar e Ishq Mien Gunjaish e Khata Koi Nai 
Ghazab To Yeh Hay k vehshat Pe Sher Kehte Hain 
Siray Say Jin Ka Mahabbat Say Waasta Koi Nai !
Waseelay Dhondh Rahe Hain k Ab Muaafi Milay.! 
Jinhain Laga Tha K Zaryoun Ka Khuda Koi Nai !!

No comments:

Post a Comment