اک حُسن کی دیوی سے مجھے پیار ہوا تھا

دل اُس کی محبت میں گرفتار ہوا تھا

Ik husn ki devi se mujhe pyar hwa tha,musheer Kazmi,Sad Poetry,Ghazal,


وہ روپ کہ جس روپ سے کلیاں بھی لجائیں
وہ زلف کہ جس زلف سے شرمائیں گھٹائیں
میخانے نگاہوں کے، اداؤں کے ترانے
دے ڈالے مجھے اُس نے محبت کے خزانے

ہاں ایسی ہی اک رات تھی، ایسا ہی سماں تھا
یہ چاند بھی پورا تھا، زمانہ بھی جواں تھا
اک پیڑ کے سائے میں جب اقرار ہوا تھا
اک حُسن کی دیوی سے مجھے پیار ہوا تھا

کشمیر کی وادی کے وہ پُر کیف نظارے
لمحات محبت کے جہاں ہم نے گزارے
انگڑائیاں لے کر مری بانہوں کے سہارے
گلنار نظر آتے تھے وہ شرم کے مارے
یک طرفہ تو نہ تھے حُسن و محبت کے اشارے
اُس نے بھی کئی بار مرے بال سنوارے

احساس کا، جذبات کا اقرار ہوا تھا
اک حُسن کی دیوی سے مجھے پیار ہوا تھا

کچھ روز کٹے یوں بھی برا وقت جب آیا
اُس حُسن کی دیوی نے بھی نظثروں کو پھرایا
غربت نے زمانے کی نگاہوں سے گرایا
آنچل مرے ہاتھوں سے محبت نے چھڑایا
اک رات کو اُس نے مجھے سوتا ہوا چھوڑا
چل دی وہ کہیں، پیار کو روتا ہوا چھوڑا
سویا ہوا میں نیند سے جاگا جو سویرے
وہ جب نہ ملی، چھا گئے آنکھوں میں اندھیرے

تقدیر کسی کو بھی برے دن نہ دکھائے
ہوتے ہیں برے وقت میں اپنے بھی پرائے
کیا پیار کی دولت کا طلبگار ہوا تھا
اک حُسن کی دیوی سے مجھے پیار ہوا تھا
دل اُس کی محبت میں گرفتار ہوا تھا
اک حُسن کی دیوی سے مجھے پیار ہوا تھا
(مشیر کاظمی)

ik husn ki devi se mujhe pyar hwa tha

dil uss ki mohabbat mein girftar sun-hwa tha

woh roop ke jis roop se kaliyan bhi لجائیں
woh zulff ke jis zulff se shrmayin ghatain
maikhanay nigahon ke, aadaon ke tarane
day daaley mujhe uss ne mohabbat ke khazanay

haan aisi hi ik raat thi, aisa hi samaa tha
yeh chaand bhi poora tha, zamana bhi jawaa tha
ik pairr ke saaye mein jab iqraar sun-hwa tha
ik husn ki devi se mujhe pyar sun-hwa tha

Kashmir ki waadi ke woh pur Kaif nazare
lamhaat mohabbat ke jahan hum ne guzaray
angraiyaan le kar meri baho ke saharay
Gulnar nazar atay thay woh sharam ke maaray
yak Tarfah to nah thay husn o mohabbat ke isharay
uss ne bhi kayi baar marey baal sanware

ehsas ka, jazbaat ka iqraar sun-hwa tha
ik husn ki devi se mujhe pyar sun-hwa tha

kuch roz katay yun bhi bura waqt jab aaya
uss husn ki devi ne bhi نظثروں ko phiraya
gurbat ne zamane ki nigahon se giraya
aanchal marey hathon se mohabbat ne choraya
ik raat ko uss ne mujhe sota sun-hwa chorra
chal di woh kahin, pyar ko rota sun-hwa chorra
soya sun-hwa mein neend se jaaga jo saweray
woh jab nah mili, chhaa gaye aankhon mein andheray

taqdeer kisi ko bhi buray din nah dukhaay
hotay hain buray waqt mein –apne bhi paraye
kya pyar ki doulat ka tallab-gaar sun-hwa tha
ik husn ki devi se mujhe pyar sun-hwa tha
dil uss ki mohabbat mein girftar sun-hwa tha
ik husn ki devi se mujhe pyar sun-hwa tha

نہ تمہیں ہوش رہے اور نہ مجھے ہوش رہے!
اس قدر ٹوٹ کے چاہو مجھے پاگل کر دو !

وصی شاہ