ہاں ادھوری سی میری ذات اگے بڑھ نہ سکی ھے 

وہ مدھوش کے وہ رات اگے بڑھ نہ سکی

کیا کریں کیا نہ کریں کہتے ہی کیا اے فاطم
تھیں بہت باتیں مگر تِل سے اگے بڑھ نہ سکی

Tik tok poetry,SHABBAR ABBAS POETRY,LOVE POETRY,URDU POETRY,


ہاں وہی تل ہے کے جو پایا ہے تیرے چہرے پے
داھنیں سمت ہے جیسے ہو کوئ تاراِ زُھر

وہ ہسی جس میں سمٹتا ہے سبھی شمس و قمر
با خدا دل ہے بہت نرم تیرا اے (شبؔر)

نام لینا ہی پڑا کرتی بھی کیا بس جان گئ
فاطمہ تیری محبت میں گِرفتار گئ۔❤️


-
haan adhuri si meri zaat uge barh nah saki he

woh madhosh ke woh raat uge barh nah saki

kya karen kya nah karen kehte hi kya ae Fatam
theen bohat baatein magar tِl se uge barh nah saki

haan wohi tall hai ke jo paaya hai tairay chehray pay
DAHINEIN simt hai jaisay ho koy Tara JHHAR

woh hasee jis mein simat-ta hai sabhi Shams o Qamar
ba kkhuda dil hai bohat naram tera ae ( شبؔر )
---
naam lena hi para karti bhi kya bas jaan gai
fatima teri mohabbat mein girftar gai. ❤️