New Fatima Blog

This blog is about khwab ki tabeer, Turkish dramas Dubbed in Urdu, Poetry, Naat and cooking videos.

Tuesday, July 13, 2021

Bhaley wo bey usool he qubool hai

 

بھلے وہ بے اُصول ہے ۔۔۔۔۔ قُبول ہے

کوئی بھی اُس کی بھول ہے ۔۔۔۔۔ قُبول ہے

وہ جھونکتا ہے میری آنکھ میں تو کیا

ذرا سی ہی تو دُھول ہے ۔۔۔۔۔ قُبول ہے

یہ پیار ہے سو پیار میں حساب کیا؟

جو حاصل و وصول ہے ۔۔۔۔۔ قُبول ہے

ارے، مجھے تمہارا پیار چاہیے

سو جو بھی اِس کا مُول ہے ۔۔۔۔۔ قُبول ہے

تو کیا تمہیں یہ میرے ہاتھ پر رکھا

گلاب کا جو پھول ہے ۔۔۔۔۔ قُبول ہے؟

تمہیں چنا عوام نے یہ سوچ کر

کہ جیسا بھی فُضول ہے ۔۔۔۔۔ قُبول ہے

کبھی کچھ ایسا پوچھ لو کہ میں کہوں

قُبول ہے ۔۔۔۔۔ قُبول ہے ۔۔۔۔۔ قُبول ہے

۔۔۔۔۔عامر امیر۔۔۔۔۔

Bhaley wo bey usool he ۔۔۔۔۔ qubool he!

koi bhi us ki bhool he ۔۔۔۔۔ qubool he!

wo jhonkta he meri aankh me to kya

zara si hi to dhool he ۔۔۔۔۔ qubool he

ye piar he so piar me hisab kya?

jo hasil-o-wasool he ۔۔۔۔۔ qubool he

arey, mujhey tumhara piar chahiey

so jo bhi is ka mool he ۔۔۔۔۔ qubool he

to kya tumhain ye merey hath par rakha

gulab ka jo phool he ۔۔۔۔۔ qubool he?

tumhain awam ne cuhna ye soch kar

ke jesa bhi fuzool he ۔۔۔۔۔ qubool he

kabhi kuch esa pooch lo ke me kahu

qubool he ۔۔۔۔۔ qubool he ۔۔۔۔۔ qubool he

........Amir Ameer.......

 

Bhaley wo bey usool he qubool hai


Bhaley wo bey usool he qubool hai



No comments:

Post a Comment